نوجوان شاعرہ ام عمارہ کی خوبصورت غزل ابھرتا ڈوبتا دل وسوسوں کی زد میں ہے پڑھنے کیلئے لنک پر کلک کریں

اُبھرتا ڈوبتا دل وسوسوں کی زد میں ہے۔۔۔
غریبِ شہر ہے سو حادثوں کی زد میں ہے۔۔

محبتوں کے حوالوں میں ذکر آنے لگا۔۔۔
پھر آج کچا گھڑا شاعروں کی زد میں ہے ۔۔

فلک کے پار ہمیں آشیاں بنانے دو۔۔۔
زمینِ قلب یہاں وحشتوں کی زد میں ہے۔۔۔

تمہارے دل کو ابھی زخم زخم ہونا ہے ۔۔۔
ابھی تو پاوں فقط آبلوں کی زد میں ۔۔

کوئی بھی خوف نہیں مجھ کوان اندھیروں سے ۔۔۔۔
مری حیات تری رحمتوں کی زد میں ہے ۔۔

جہاں نے دیکھا توبتلائے گا کہ تُو کیاہے ۔۔
ترا جمال ابھی آئنوں کی زد میں ہے ۔۔
اُمِ عمارہ

اپنا تبصرہ بھیجیں